April 15, 2024

Warning: sprintf(): Too few arguments in /www/wwwroot/station57.net/wp-content/themes/chromenews/lib/breadcrumb-trail/inc/breadcrumbs.php on line 253

اگر اسرائیل حماس جنگجوؤں کا تعاقب کرتے ہوئے رفح پر حملہ کرے گا تو اس کے نتائج برآمد ہو سکتے ہیں: کملا ہیرس

امریکی نائب صدر کملا ہیرس

امریکی نائب صدر کملا ہیرس نے رفح پرحملہ کرنے کے حوالے سے اسرائیل کو خبردار کیا ہے۔ انہوں نے اے بی سی نیوز کے ساتھ ایک انٹرویو میں کہا کہ اگر اسرائیل حماس جنگجوؤں کا تعاقب کرتے ہوئے رفح پر حملہ کرے گا تو اس کے نتائج برآمد ہو سکتے ہیں۔ انہوں نے کہا ہم متعدد مرتبہ واضح کرچکے ہیں کہ رفح میں کوئی بھی بڑا فوجی آپریشن ایک بہت بڑی غلطی ہو گی۔ میں نے نقشوں کا مطالعہ کیا ہے۔ ان لوگوں کے پاس منتقل ہونے کے لیے کوئی جگہ نہیں ہے۔

کملا نے مزید کہا کہ ہم بہت واضح ہیں کہ بہت بڑی تعداد میں بے گناہ فلسطینی مارے گئے ہیں۔ ہم نے واضح کر دیا ہے کہ اسرائیل، اس کی عوام اور فلسطینی برابر کی سلامتی اور وقار کے حقدار ہیں۔

ان سے پوچھا گیا کہ نیتن یاہو اپنی متوقع کارروائی کو آگے بڑھاتے ہیں تو کیا امریکہ “نتائج” کے بارے میں سوچے گا؟ جواب میں ہیرس نے کہا یہ بات ٹھیک ہے کہ ہم اس معاملے کو مرحلہ وار نمٹائیں گے، لیکن ہم اپنے نقطہ نظر میں اس حوالے سے بالکل واضح ہیں کہ آیا ایسا ہونا چاہیے یا نہیں۔ براڈکاسٹر نے سوال کیا کہ کیا آپ اس بات کو مسترد کرتے ہیں کہ اس کے امریکہ کے لیے بھی نتائج برآمد ہوں گے؟۔ امریکی نائب صدر کا جواب تھا کہ میں کسی بھی چیز کو مسترد نہیں کرتی۔

کملا ہیرس سے ڈیموکریٹک سینیٹ کے اکثریتی رہنما چک شومر کے اسرائیل میں نئے انتخابات کے مطالبے کے بارے میں بھی پوچھا گیا۔ ہیرس نے جواب دیا کہ میں سینیٹر شومر کی طرف سے بات نہیں کروں گی لیکن ہم بالکل واضح ہیں کہ یہ فیصلہ اسرائیلی عوام پر منحصر ہے کہ انتخابات کب ہوں گے اور وہ کس کو منتخب کریں گے۔ امریکہ اسرائیل کو رفح پر حملے سے روکنے کی کوشش کر رہا ہے لیکن اسرائیل کا کہنا ہے کہ وہ ہر صورت رفح میں داخل ہوگا تاکہ حماس کا خاتمہ کیا جاسکے۔

امریکی صدر بائیڈن کی انتظامیہ کو امید ہے کہ وہ آنے والے دنوں میں واشنگٹن کا دورہ کرنے والے سینئر اسرائیلی حکام کو اس بات پر قائل کر لیں گے کہ حماس کو ختم کرنے کے لیے رفح پر مکمل زمینی حملے کی ضرورت نہیں ہے۔ رفح میں زمینی کارروائی غزہ کی پٹی میں انسانی بحران کو بڑھا سکتی ہے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *