April 15, 2024

Warning: sprintf(): Too few arguments in /www/wwwroot/station57.net/wp-content/themes/chromenews/lib/breadcrumb-trail/inc/breadcrumbs.php on line 253
Bidend and Puten

روسی صدر ولادیمیر پوتین نے اپنے امریکی ہم منصب جو بائیڈن کی جانب سے انہیں “پاگل” قرار دینے کا مذاق اڑایا اور ان کے لیے توہین آمیز گفتگو کی۔ پوتین کا کہنا تھا کہ ڈونلڈ ٹرمپ جوبائیڈن سے روس کے لیے زیادہ موزوں امریکی صدرثابت ہوں گے۔

پوتین نے ایک روسی ٹیلی ویژن صحافی کو بتایا کہ بائیڈن “میرا نام نہیں لیں گے میرا ‘وولودیا (روسی میں ولادیمیر کا نک نیم سا نام) نہیں لیا۔ بہت اچھا شکریہ، آپ نے میری بہت مدد کی’

جمعرات کو پوتین نے کہا کہ بائیڈن نے گذشتہ ہفتے اپنے بیانات نے انہیں “پاگل” قرار دیا جس میں انہوں نے کہا تھا کہ وہ ڈونلڈ ٹرمپ کے بجائے بائیڈن کو امریکہ کے صدر کے طور پر ترجیح دیتے ہیں۔

پوتین نے مزید کہا کہ بائیڈن کا بیان واضح کرتا ہے کہ کریملن انہیں مستقبل میں امریکہ کے صدر کے طور پر کیوں ترجیح دیتا ہے۔

پوتین نے ہلکی سی مسکراہٹ کے ساتھ سرکاری ٹیلی ویژن کو بتایا کہ “ہم کسی بھی صدر کے ساتھ کام کرنے کے لیے تیار ہیں، لیکن میں سمجھتا ہوں کہ بائیڈن روس کے لیے زیادہ ترجیحی صدر نہیں ہیں۔

ایک رپورٹر کے پوچھے جانے پر کہ کیا بائیڈن کے تبصرے “بے وقوفانہ” تھے پویتن نے جواب دیا ’ہاں‘۔

پوتین نے “آپ نے مجھ سے پوچھا کہ ہمارے لیے کون سا بہتر ہے۔ میں نے تب کہا کہ اور مجھے اب بھی لگتا ہے کہ میں اسے دہرا سکتا ہوں: یہ بائیڈن ہے”۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *